احمد محمود کی گھڑی - سائنس کی دنیا | سائنس کی دنیا

احمد محمود کی گھڑی

ٹیکساس کی رہائشی احمد محمود کی عمر 14 سال ہے۔ حال ہی میں احمد نے ایک انوکھی گھڑی از خود بنائی اور اسے لے کر اپنے اسکول پہنچ گیا۔ جب اس گھڑی کی خبر سکول کے پرنسپل کو معلوم ہوئی اور انہیں اس کا سرکٹ دکھایا گیا تو ان صاحب نے سمجھا کہ شاید یہ کوئی بم دھماکہ کرنے کے لئے استعمال کی جانے والی گھڑی ھے لہذا فوراََ پولیس کو فون کر کے بلا لیا اور احمد محمود کو گرفتار کروا دیا۔ تاہم بعد میں اس گھڑی کا معائنہ کرنے کے بعد معلوم ھوا کہ یہ کسی بم سے متعلق گھڑی نہیں ہے بلکہ اس کا تعلق عام گھڑیوں کی طرح ہے تاہم اس میں کچھ اضافی فیچرز پائے جاتے ہیں جو کہ نہایت خوش آئیند ہیں۔ یہ خبر اس وقت سوشل میڈیا اور مغربی بولیٹن نیوز میں جنگل کی آگ کی طرح پھیلی ہوئی ہے۔

احمد محمود کی گھڑی

احمد محمود کی گھڑی

یہ خبر سننے کے بعد فیس بک کے مالک مارک زکربرگ نے گرفتاری والے واقعے کو ایک نہایت برا واقعہ قرار دیا اور پولیس پر کڑی تنقید کر ڈالی۔ نہ صرف یہ بلکہ مارک زکربرگ نے محمد احمد نامی اس ننھے سائنسدان کو اپنے آفس میں شرکت کی دعوت بھی دی اور کہا کہ

اگر کسی شخص میں کچھ اچھا کرنے کی صلاحیت ہو تو اسے گرفتار نہیں کرنا چاہئے بلکہ کچھ اچھا پیش آنا چاہئے، سراہنا چاہئے، تالیاں بجانی چاہئئیں۔ مستقل احمد جیسے لوگوں کا زمانہ ہے۔

مارک زکربرگ، سی ای او فیس بک

اس کے علاوہ امریکا کے صدر اوبامہ نے احمد محمود کو وائٹ ھائوس دعوت پر شرکت بھی دی۔

1449 :اب تک پڑھنے والوں کی کُل تعداد 2 :آج پڑھنے والوں کی تعداد



Written by