تین پیروں والے جانور

تین پیروں والے جانور

تین پیروں والے جانور۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کیا ایسا ممکن ہے۔ اس مضمون کو پڑھنے کے لیے ویب سائٹ وزٹ کیجیے اور تازہ ترین سائنسی مضامین سے باخبر رھیے۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

حال ہی میں سائنس کی دنیا گروپ میں ایک ممبر نے سوال پوچھا کہ کیا تین پیروں پر مشتمل جانور پائے جاتے ہیں جس کے جواب میں مختلف طرح کی آراء پیش کی گئیں اور اس سوال کو مد ِ نظر رکھ کر اس پر بحث کی گئی۔

جی نہیں ایسا جانور ابھی تک دریافت نہیں ہوا- البتہ سمندر میں سٹار فش پائی جاتی ہے جس کے پانچ ‘بازو’ ہوتے ہیں- زیادہ تر جانوروں میں bilateral symmetry پائی جاتی ہے یعنی ان کے دائیں اور بائیں حصے ایک دوسرے کے mirror images ہوتے ہیں- اس وجہ سے اکثر جانوروں کے تمام limbs جوڑوں کی شکل میں ہی پائے جاتے ہیں

طاق پیروں والے جانور آپ کو صرف ایکائنوڈرمز میں ملے گے لیکن ان میں ریڈیل سمٹری ہے۔ لیکن ممالیہ جانوروں میں آپ کو آپ کو دو آرڈر جفت اور طاق انگلیوں کی

بنیاد پر ضرور مل جائینگے۔

ایک صاحب اپنا احوال بتاتے ہوئے کہتے ہیں کہ سرکس میں پانچ ٹانگوں والی گاے کا سنا تھا بڑے اشتیاق سے دیکھنے گیئے لیکن گاے کی پانچویں ٹانگ اس کے کولہے سے پیوست تھی جس میں حرکت نہیں تھی اور یہ ٹانگ ایک اضافی عضو معلوم ہوتی تھی جو کہ دیگر ٹانگوں سے بہت چھوٹی تھی

شیئر:
مباحثہ میں شریک ہوں

%d bloggers like this: